آپؐ ہیں خیر البشرؐ خیر الوریٰؐ، میرے نبیؐ

آپؐ ہیں خیر البشرؐ خیر الوریٰؐ، میرے نبیؐ

آپؐ ہیں شمس الضحیٰؐ بدر الدجیٰؐ، میرے نبیؐ

 

انبیا ہیں لائقِ تعظیم سارے ہی مگر

منفرد، یکتا، امام الانبیاؐ، میرے نبیؐ

 

دِلرُبا و دِلکشا و جاں فزا و رُوح فزا

مسجدِ نبوی کی نورانی فضا، میرے نبیؐ

 

اس لیے یاں پر معطر ہے معنبر ہے ہوا

چھُو کے آتی ہے یہ دامن آپؐ کا، میرے نبیؐ

 

میں بھی ہوں اُمیدوارِ یک نگاہِ التفات

آپؐ کے در کا ہوں میں ادنیٰ گدا، میرے نبیؐ

 

آپؐ کے دیدار سے عُشاق ہوں گے فیض یاب

جلوہ فرما ہوں گے جب روزِ جزا، میرے نبیؐ

 

آپؐ کے فیضان سے زندہ و تابندہ، ظفرؔ

دم بدم، ہر دم پکارے ہے سدا، میرے نبیؐ

یہ نگارش اپنے دوست احباب سے شریک کیجیے
Share on facebook
Share on twitter
Share on whatsapp
Share on telegram
Share on email

اشتہارات

لُطفِ سُخن کچھ اس سے زیادہ

اردوئے معلیٰ

پر

خوش آمدید!

گوشے

متعلقہ اشاعتیں

نظر نظر کی محبت ادا ادا تھی شفیق
سعادت یہ خیر اُلبشرؐ دیجئے
اے ختمِ رُسل اے شاہِ زمن اے پاک نبی رحمت والے
میں لاکھ برا ٹھہرا، یہ میری حقیقت ہے
تیرا کہنا مان لیں گے اے دلِ دیوانہ ہم​
دار و مدارِ حاضری تیری رضا سے ہے
معجزہ ہے آیہء والنجم کی تفسیر کا ​
قوسِ قزح میں لفظ بنوں نعت میں کہوں
سلام علیک اے نبی مکرم
جب سے ملی ہے حسنِ عقیدت کی روشنی

اشتہارات