اردوئے معلیٰ

Search

اس کے محیطِ فکر کی کوئی نہیں ہے حد

اِس کی نظر کے آگے ہویدا ازل اَبد

قطرہ ہے اُس کے سامنے ہر قلزمِ خرد

جانے ہے وہ بحیرۂ دانش کے جزر و مَد

بالا مقام اُس کی نگاہوں میں پَست ہے

ارض و سَما کا فاصلہ لمحے کی جَست ہے

یہ نگارش اپنے دوست احباب سے شریک کیجیے
لُطفِ سُخن کچھ اس سے زیادہ