ان کے نام پاک پر مرجائیے

ان کے نام پاک پر مرجائیے

موت کو فخر شہادت کیجیے

 

مرزع اسلام کو پھر سنیچ کر

قلبِ کافر پر قیامت کیجیے

 

حق پرستی کی سزا کیونکر ملے

آگے بڑھیے اور جرأت کیجیے

 

حق نے باطل کومٹایا جس طرح

پھر اسے زندہ حقیقت کیجیے

 

فیصلہ کن انقلاب آنے کو ہے

پیش دعوے پرشہادت کیجیے

یہ نگارش اپنے دوست احباب سے شریک کیجیے
Share on facebook
Share on twitter
Share on whatsapp
Share on telegram
Share on email
لُطفِ سُخن کچھ اس سے زیادہ

اردوئے معلیٰ

پر

خوش آمدید!

گوشے

متعلقہ اشاعتیں

مجھے چاہیے مرے مصطفیٰ ترا پیار، پیار کے شہر کا
معطیِ مطلب تمہارا ہر اِشارہ ہو گیا
نگاہِ لطف کے اُمیدوار ہم بھی ہیں
مدحتِ مصطفیٰ گنگنانے کے بعد
یہ جُود و کرم آپؐ کا ہے، فیض و عطا ہے
ہم درِ مصطفیؐ پہ جائیں گے
مرے گھر کا جو دروازہ کھلا ہے
فراق و ہجر کا دورانیہ ہو مختصر، آقاؐ
آتی ہے رات دن اک آواز یہ حرم سے
اک نور سے مطلعِ انوار مدینہ