اردوئے معلیٰ

Search

ان کے پسینے کی خوشبو تو گلشن گلشن چھائی ہے

نام ہے پیارا جن کا محمد ان کا جہاں شیدائی ہے

 

میرے عقیدت کے اشکوں کو لوگ جواہر کہتے ہیں

پھول کھلے ہیں نعتِ نبی جب لبوں پر آئی ہے

 

فرشِ زمیں پر بکھرے دیکھے ہم نے موتی چمکیلے

یادِ سرور کی بدلی اشکوں کی بارش لائی ہے

 

اللہ اللہ جوبن پر ہیں خوب بہاریں طیبہ کی

گل تو گل ہیں خاروں میں بھی جنت کی رعنائی ہے

 

ان کے غلاموں میں ہے فداؔ بھی جن کی نوازش کی خاطر

شاہوں نے شاہی کو چھوڑا ان کی غلامی پائی ہے

یہ نگارش اپنے دوست احباب سے شریک کیجیے
لُطفِ سُخن کچھ اس سے زیادہ