اردوئے معلیٰ

اُسوۂ شاہِ دو عالم میں سراپا ڈھل کر

 

اُسوۂ شاہِ دو عالم میں سراپا ڈھل کر

کاش ! کردار سجا کر، میں کروں مدحِ رسول

جو امانت مجھے سونپی ہے مرے خالق نے

حسن و خوبی سے اُٹھا لوں تو کروں مدحِ رسول

 

یہ نگارش اپنے دوست احباب سے شریک کیجیے

اشتہارات

لُطفِ سُخن کچھ اس سے زیادہ