اردوئے معلیٰ

اُمی نے بہرہ مند کیا عقل و خرد سے

اُمی نے بہرہ مند کیا عقل و خرد سے

واقف کیا شعور کو معبودِ اَحد سے

 

اے فخر انبیا تری توصیف کس سے ہو

توصیف ہے وریٰ تری ہر حرف و عدد سے

 

ہو جاتی ہیں آسان سبھی مشکلیں میری

اللہ کی عطا سے، محمد کی مدد سے

 

بس ایک عطا اور شہِ جود و عطا ہو

کر دینا سرفراز غلامی کی سند سے

 

جلوے تو دیکھنے کو ملیں گے حضور کے

خائف نہیں میں ہوتا کبھی کنجِ لحد سے

 

محشر کی تیز دھوپ میں اے قرۃُ عینی

اشفاقؔ بہرہ ور ہو ترے سایہء قد سے

یہ نگارش اپنے دوست احباب سے شریک کیجیے

اشتہارات

لُطفِ سُخن کچھ اس سے زیادہ