اردوئے معلیٰ

Search

اُن کے افکار سے کردار سے خوشبو آئی

جب وہ بولے لب و رخسار سے خوشبو آئی

 

اُن کی آمد سے بیاباں میں بہاریں آئیں

اُن کے صدقے در و دیوار سے خوشبو آئی

 

وہ جنھیں آپ کی چاہت کا قرینہ آیا

اُن کے اقرار سے ، گفتار سے خوشبو آئی

 

ہوں ابوبکرؓ کہ عثمانؓ ، علیؓ ہوں کہ عمرؓ

حُبِـّ احمد کے سمن زار سے خوشبو آئی

 

میرے الفاظ مری سوچ کی پروازوں میں

مدحتِ سیدِ اَبرار سے خوشبو آئی

 

آتشِ عشقِ محمد میں جلایا خود کو

جسم مہکا ، دلِ بیمار سے خوشبو آئی

یہ نگارش اپنے دوست احباب سے شریک کیجیے
لُطفِ سُخن کچھ اس سے زیادہ