اردوئے معلیٰ

Search

اُنہی کا نور پھیلا ہے جدھر دیکھو جہاں دیکھو

اِدھر دیکھو اُدھر دیکھو یہاں دیکھو وہاں دیکھو

 

غلاموں کی رسائی تا بہ بزمِ قدسیاں دیکھو

کہاں سے اُن کی نسبت نے ہے پہنچایا کہاں دیکھو

 

اثر ہے دامنِ سرکار سے وابستہ ہونے کا

عیاں ہونے لگے کس طرح اسرارِ نہاں دیکھو

 

جوابِ ہر سوالِ ماضی و فردا ملا اُن سے

گماں تک بھی نہیں ایسے مٹے وہم و گماں دیکھو

 

ہر سو بارشِ انوارِ رحمت ہے مدینے میں

یہ ہے دربار آقا کا کہ جنت کا نشاں دیکھو

 

ہم اپنی تنگ دامانی سے عاجز ہوگئے ورنہ

ہے لطف و جود و رحمت کا یہاں دریا رواں دیکھو

 

گنہہ گار اُن کے در پر جائیں یہ حکمِ اِلٰہی ہے

وہ راضی ہوں تو پھر ہوتا ہے حکمِ کُن فکاں دیکھو

 

کسی صورت کسک اس درد کی کم ہو نہیں پاتی

علاجِ درد سے بڑھتا ہے کیوں دردِ نہاں دیکھو

 

گدائے در پریشاں حال محشر میں رہے کیوں کر

انیسِ بے کساں دیکھو شفیعِ عاصیاں دیکھو

 

کرم سے اُن کے اُن کی نعت ہوتی ہے رقم عارفؔ

مری بے مایگی دیکھو مرا طرزِ بیاں دیکھو

یہ نگارش اپنے دوست احباب سے شریک کیجیے
لُطفِ سُخن کچھ اس سے زیادہ