آثار بتاتے ہیں دل مرا کہتا ہے سرکار بُلاتے ہیں

آثار بتاتے ہیں

دل مرا کہتا ہے

سرکار بُلاتے ہیں

یہ نگارش اپنے دوست احباب سے شریک کیجیے
Share on facebook
Share on twitter
Share on whatsapp
Share on telegram
Share on email

اشتہارات

لُطفِ سُخن کچھ اس سے زیادہ

اردوئے معلیٰ

پر

خوش آمدید!

گوشے

متعلقہ اشاعتیں

گوریاں ہوتی ہیں جیسے ساجنوں کی قید میں
ای میل E-mail
نعتوں کا اُجالا ہے عشقِ محمد تو
سفر ہے خواب کا اور باادب ہے
تھا فقط منظرِ صدا پتّا
عادت
تجھ سے سب زاویے دمکتے ہیں
بلا لے ہم کو بھی اب کے مدینے یا رسول اللہ
غدر سے بے خبر نہیں ہونا
کیا پتہ اب منتظر آنکھوں میں بینائی نہ ہو

اشتہارات