اردوئے معلیٰ

Search

اک ثانئے کو چونک اٹھے تم کو دیکھ کر

مصروفِ رقصِ مرگ مگر پھر سے ہو گئے

 

ہئیت وہ ہو چکی تھی کہ جب لوٹنا ہوا

رستے جھجھک کے دور مسافر سے ہو گئے

 

شاعر ہے نصف مجھ میں تو ہے نصف بھیڑیا

اور تم خفا ہوئے بھی تو شاعر سے ہو گئے

 

یہ نگارش اپنے دوست احباب سے شریک کیجیے
لُطفِ سُخن کچھ اس سے زیادہ