اردو معلی copy
(ہمارا نصب العین ، ادب اثاثہ کا تحفظ)

اے خدا تیری عظمت کا کیا ہو بیاں ، تیرے اک لفظِ کن سے ہے سارا جہاں

اے خدا تیری عظمت کا کیا ہو بیاں ، تیرے اک لفظِ کن سے ہے سارا جہاں

تو یہاں تو وہاں ،تو عیاں تو نہاں ،تیرے اک لفظِ کن سے ہے سارا جہاں

 

تیری عظمت بتائی نبی نے ہمیں ،تیری وحدانیت پر یقیں ہے ہمیں

سب کا خالق ہے تو جتنے ہیں انس و جاں ، تیرے اک لفظِ کن سے ہے سارا جہاں

 

ہر نفس میں ثنا تیری کرتا رہوں ، تیرے احکام پر ہی میں چلتا رہوں

حمد لکھتا رہوں دم بہ دم میں یہاں ’تیرے اک لفظ کن سے ہے سارا جہاں

 

ارض کعبہ کو بھی ارض طیبہ کو بھی، دیکھ لوں آنکھ سے ہے تمنا مری

ہو عنایت تری میں وہاں دوں اذاں ، تیرے اک لفظِ کن سے ہے سارا جہاں

 

تیری وحدانیت میرا ایمان ہے، میرے پیش نظر صرف قرآن ہے

دے ہدایت مجھے میں رہوں خوش گماں ، تیرے اک لفظ کن سے ہے سارا جہاں

 

دل میں روشن نبی کی ہو قندیل بھی، تیری حمد و ثنا کی ہو تکمیل بھی

کلمۂ حق ہو خوشدلؔ کو بس حرزِ جاں ،تیرے اک لفظِ کن سے ہے سارا جہاں

یہ نگارش اپنے دوست احباب سے شریک کیجیے
Share on facebook
Share on twitter
Share on whatsapp
Share on telegram
Share on email
لُطفِ سُخن کچھ اس سے زیادہ

اردوئے معلیٰ

پر

خوش آمدید!

گوشے

متعلقہ اشاعتیں

ہر طرف کائنات میں تم ہو
نعمتیں سب ہوئیں عطا مولا
ہر ایک لمحے کے اندر قیام تیرا ہے
تیری قدرت کی خوشبو، ہر گل ہر ذرے میں تُو
خدا نے مجھ کو یہ اعزاز بخشا
خدا کا شُکر کرتا ہوں، خدا پر میرا ایماں ہے
خدا اعلیٰ و ارفع ہے، خدا عظمت نشاں ہے
حرم کے سائے میں سارے مسلماں رُوبرو بیٹھیں
خدا کے حمد گو جنگل بیاباں
جو احکامِ خدا سے بے خبر ہے