اردوئے معلیٰ

’’بناتے جلوہ گاہِ ناز میرے دیدہ و دل کو‘‘

 

’’بناتے جلوہ گاہِ ناز میرے دیدہ و دل کو‘‘

قرار آتا یقیناً اس طرح سے قلبِ بسمل کو

وہ رہتے دیدۂ تر میں تو رہتے قلبِ مضطر میں

’’کبھی رہتے وہ اِس گھر میں کبھی رہتے وہ اُس گھر میں ‘‘

 

یہ نگارش اپنے دوست احباب سے شریک کیجیے

اشتہارات

لُطفِ سُخن کچھ اس سے زیادہ