اردوئے معلیٰ

بنایا ہے حسیں پیکر خدا نے مشک و عنبر سے

رکھا اس میں ہے نور ایسا چمک زیادہ ہے اختر سے

 

ضیا باراں ہوئی دنیا اسی کی ذاتِ انور سے

جسے دے کر کیا ارفع و اعلیٰ حوضِ کوثر سے

 

بنا ذریعہ وجودِ عالمیں کا جو وہی احمد

سلام و رحمتیں تجھ پر نبی آخر نبی احمد

 

صفا پہ جاکے بے باکی سے جس نے وہ منادی دی

ہے شاہد مکہ کی وادی کہ کنکر نے گواہی دی

 

سلیماں ناز کرتے تھے کہ سلطانی مثالی دی

مگر محبوب کے صدقے نے ہی تو حکمرانی دی

 

سلام اس پر ہو جس کا نام بھی فخرِ آدم ہے

سلام اس پر ہو جس کی ذات ہی امنِ عالم ہے

یہ نگارش اپنے دوست احباب سے شریک کیجیے

اشتہارات

لُطفِ سُخن کچھ اس سے زیادہ

اردوئے معلیٰ

پر

خوش آمدید!

گوشے۔۔۔

حالیہ اشاعتیں

اشتہارات

اشتہارات