اردوئے معلیٰ

بیان کیسے ہو عظمت رسولِ اکرم کی

خدا ہی جانے حقیقت رسولِ اکرم کی

 

عروجِ نوعِ بشر کے لیے یہ کافی ہے

رہے نظر میں شریعت رسولِ اکرم کی

 

کسی کے وہم و گماں میں نہ آ سکے گی کبھی

کہاں ہے سرحدِ رفعت رسولِ اکرم کی

 

خدا اور اس کے ملائک تو کرتے ہیں ہر دم

اے مومنو! کرو مدحت رسولِ اکرم کی

 

خدا ہے ان کا خدا کے ہیں یہ خدا کی قسم

خدائی پر ہے حکومت رسولِ اکرم کی

 

طواف کرتے ہیں اُس دل کا تو ملائک بھی

بسی ہے جس میں محبت رسولِ اکرم کی

 

اسی لیے تو کہا والضحیٰ و یٰسیں بھی

کہ رب کو پیاری ہے صورت رسولِ اکرم کی

 

زمین کیا ہے فلک پر بھی ہے رضاؔ چھائی

خدا کے فضل سے رحمت رسولِ اکرم کی

یہ نگارش اپنے دوست احباب سے شریک کیجیے

اشتہارات

لُطفِ سُخن کچھ اس سے زیادہ

اردوئے معلیٰ

پر

خوش آمدید!

گوشے۔۔۔

حالیہ اشاعتیں

اشتہارات

اشتہارات