اردوئے معلیٰ

تازہ خیال میں ہوں قُباؔ اور قبلتینؔ

 

تازہ خیال میں ہوں قُباؔ اور قبلتینؔ

جب رو برو ہو مسجدِ میقات اے خدا

 

جمعہؔ، اجاجہؔ، رایہؔ، غمامہؔ، سی مسجدیں

مجھ کو عطا کریں نئی راحات اے خدا

 

سیراب قلب و جاں ہوں سرِ وادئ عقیق

نکلیں تمام قلب کی حسرات اے خدا

 

کہفِ بنی حرام کے آثار ڈھونڈتے

خندق کے روبرو ہوں نشانات اے خدا

 

کہفِ بنی حرام کے آثار ڈھونڈتے

خندق کے روبرو ہوں نشانات اے خدا

 

ہو جنتِ بقیع میں اس طور حاضری

زیبِ جبیں ہوں طیبہ کے ذرات اے خدا

 

یہ نگارش اپنے دوست احباب سے شریک کیجیے

اشتہارات

لُطفِ سُخن کچھ اس سے زیادہ