اردوئے معلیٰ

Search

تری ذات ہے پاک پروردگار

تری نعمتوں کا نہیں کچھ شمار

 

ترے نام کی برکتیں ہیں سبھی

تری شانِ اعلٰی بہت باوقار

 

دلِ ناتواں نے سہے دکھ ہزار

تو ہی دینے والا دلوں کو قرار

 

کیا ہم کو محبوب اپنا عطا

کریں کس طرح نعمتوں کا شمار

 

یہ عاصی پریشاں غموں سے نڈھال

گناہوں کا جس کے نہیں کچھ شمار

 

نہیں کوئی خالق بنا وارثیؔ

کرے راز پنہاں کو جو آشکار

یہ نگارش اپنے دوست احباب سے شریک کیجیے
لُطفِ سُخن کچھ اس سے زیادہ