اردوئے معلیٰ

تمام عمر رہا میں سبھوں سے بیگانہ

تمام عمر رہا میں سبھوں سے بیگانہ

رہا میں اس پہ بھی غربت میں گو وطن میں رہا

حریص مایۂ ہستی تھا کس قدر آزادؔ

تمام عمر تلاش مئے کہن میں رہا

یہ نگارش اپنے دوست احباب سے شریک کیجیے

اشتہارات

لُطفِ سُخن کچھ اس سے زیادہ