اردوئے معلیٰ

Search

تنگئ رزق سے ہلکان رکھا جائے گا کیا

دو گھروں کا مجھے مہمان رکھا جائے گا کیا

 

تُجھے کھو کر تو تیری فِکر بہت جائز ہے

تُجھے پا کر بھی تیرا دھیان رکھا جائے گا کیا

 

کس بھروسے پہ اذیت کا سَفر جاری ہے

دُوسرا مرحلہ آسان رکھا جائے گا کیا

 

خوف کے زیرِاثر تازہ ہوا آئے گی

اب دریچے پہ بھی دربان رکھا جائے گا کیا

 

دَرد کا شَجرہ دِکھانے کے لئے مقتل میں

ساتھ خنجر کے نمک دان رکھا جائے گا کیا

 

چل ترا مان رکھا میں نے تقاضا چھوڑا

چپ رہوں گا تو مرا مان رکھا جائے گا کیا

 

مان بھی لے کہ تُجھے میں نے بہت چاہا ہے

دوست سَر پر مرے قرآن رکھا جائے گا کیا

یہ نگارش اپنے دوست احباب سے شریک کیجیے
لُطفِ سُخن کچھ اس سے زیادہ