اردوئے معلیٰ

تو عالم بے حصار، میں ایک سراب

تو عالم بے حصار، میں ایک سراب

تو قلزم بے کنار، میں ایک حباب

ہیں تیرے طلوع سے ازل اور ابد

ہے میرے غروب سے زمانوں کا حجاب

یہ نگارش اپنے دوست احباب سے شریک کیجیے

اشتہارات

لُطفِ سُخن کچھ اس سے زیادہ