اردوئے معلیٰ

Search

جس کو بھی میرے نبی سے کوئی نسبت ہو گی

اس کی قسمت میں بھلا کیسے نہ جنت ہو گی

 

اس کو ہے خوف لحد کا نہ ہی ڈر محشر کا

جس کے دامان میں آقا کی محبّت ہو گی

 

جب نکیرین لحد میں کریں گے مجھ سے سوال

لب پہ میرے شہِ ابرار کی مدحت ہو گی

 

غیر ممکن ہے کہ سرکار ہوں راضی اس پر

آلِ اطہر کی نہ جس دل میں مودت ہو گی

 

وہ ہیں محبوبِ خدا وہ ہیں شفیعِ عالم

جس کی وہ چاہیں گے محشر میں شفاعت ہو گی

 

ماند پڑ جائے گا خورشیدِ قیامت زاہدؔ

جس گھڑی آپ کے چہرے کی زیارت ہو گی

یہ نگارش اپنے دوست احباب سے شریک کیجیے
لُطفِ سُخن کچھ اس سے زیادہ