جنہوں نے اپنے سروں پہ کفن لپیٹے ہیں

جنہوں نے اپنے سروں پہ کفن لپیٹے ہیں

یہ سرفروش سپاہی کسی کے بیٹے ہیں

یہ سرحدوں پہ کھڑے فوجیوں کا ہے احسان

کہ ہم سکون سے اپنے گھروں میں لیٹے ہیں

یہ نگارش اپنے دوست احباب سے شریک کیجیے
Share on facebook
Share on twitter
Share on whatsapp
Share on telegram
Share on email
لُطفِ سُخن کچھ اس سے زیادہ

اردوئے معلیٰ

پر

خوش آمدید!

گوشے

متعلقہ اشاعتیں

پسماندگانِ عشق کی ڈھارس بندھائی جائے
حسینؑ عظمت خیرالوریٰ کا مظہر ہے
کرے انساں جو انساں سے بھلائی
خدا میرا زمانوں کا خدا ہے
جمال خانہ کعبہ دل کشا، جاذب نظر ہے
محبت ہو اگر بین الاُمم، ہو بین الاسلامی
وہ یکتا منفرد سب سے جُدا ہے، خدائے مصطفیٰؐ میرا خدا ہے
خدا کے عشق میں مسرور رہنا
خدا میرا معظم، محترم ہے
رگ و پے میں سمایا اسم ربی