اردوئے معلیٰ

 

’’جو ہیں مریضِ محبت یہاں چلیں آئیں ‘‘

کہ چارہ گر سے ہر اک درد کی دوا پائیں

کبیدہ ہوں نہ کبھی بھی ستم کے دریا سے

’’صدا یہ آتی ہے سُن لو مزارِ مولا سے‘‘

 

یہ نگارش اپنے دوست احباب سے شریک کیجیے

اشتہارات

لُطفِ سُخن کچھ اس سے زیادہ

اردوئے معلیٰ

پر

خوش آمدید!

گوشے۔۔۔

حالیہ اشاعتیں

اشتہارات

اشتہارات