اردوئے معلیٰ

Search

 

جہاں میں وہ ازل کے حُسن کا آئینہ دار آیا

کہ جس کو دیکھ کر خود خالق اکبر کو پیار آیا

 

حسیں ایسا کہ اُس کے حُسن پر یوسف بھی ہو قرباں

اُسی کے عکس رُخ سے حُسن یوسف پر نکھار آیا

 

وہ جس کی زندگی تھی اک نمونہ حُسنِ سیرت کا

وہ جس کی بندگی سے بندگی کا اعتبار آیا

 

فرشتے اب اُسی کے نام کی تسبیح پڑھتے ہیں

وہ بن کر اُس کمال حُسن کا آئینہ دار آیا

 

گئے تھے جستجو میں‌جس کی کوہِ طور تک موسیٰ

مدینہ میں نظر ہم کو وہ نورِ کردگار آیا

 

زمانہ مضطرب تھا آدمیت محوِ گریہ تھی

وہ آیا تو جہاں کی بے قراری کو قرار آیا

 

سمجھ کر خاکِ پا ہم نے بنایا آنکھ کا سُرمہ

مدینہ کی طرف سے جب کبھی اُڑ‌کر غبار آیا

 

فلک پر کاش کوئی عیسی دوراں سے کہدیتا

وہ جس کا مدتوں سے آپ کو تھا انتظار آیا

 

ہوا محسوس جیسے آیا ہوں معراج سے واپس

مدینہ میں کبھی دو چار لمحہ گر گذار آیا

 

کسی محفل میں جب بھی آیا ذکر جلوہء خالق

زباں پر نام ِ محبوبِ خدا بے اختیار آیا

 

یہ نگارش اپنے دوست احباب سے شریک کیجیے
لُطفِ سُخن کچھ اس سے زیادہ