اردوئے معلیٰ

Search

حالِ دل کس کو سناؤں آپ کے ہوتے ہوئے

اور دَر پہ کس کے جاؤں آپ کے ہوتے ہوئے

 

میرے تو سب کچھ ہی آقا آپ ہیں صرف آپ ہیں

اور لو کس سے لگاؤں آپ کے ہوتے ہوئے

 

میرے دکھ کو اور کوئی چارہ گر سمجھے گا کیا

زخمِ دل کس کو دکھاؤں آپ کے ہوتے ہوئے

 

میں کسی حاتم کے آگے اک سوالی کی طرح

ہاتھ کیوں پھیلانے جاؤں آپ کے ہوتے ہوئے

 

میرے تو دکھ درد کے واحد مسیحا آپ ہیں

اور میں کس کو بلاؤں آپ کے ہوتے ہوئے

 

میں بہت شرمندہ ہوں اپنے گناہوں پر مگر

یہ حقیقت کیوں چھپاؤں آپ کے ہوتے ہوئے

 

جو ستم مجھ پر ہوئے ہیں وقت کے ہاتھوں حضور

اور میں کس کو بتاؤں آپ کے ہوتے ہوئے

 

میرے لہجے کی تڑپ کو اور پہچانے گا کون

نعت کس کو جا سناؤں آپ کے ہوتے ہوئے

 

آپ کا اقبال میرے ساتھ ہے تو فکر کیا

رنجِ محشر کیوں اٹھاؤں آپ کے ہوتے ہوئے

یہ نگارش اپنے دوست احباب سے شریک کیجیے
لُطفِ سُخن کچھ اس سے زیادہ