اردوئے معلیٰ

Search

حسین ابن علیؓ صبر و رِضا کا آئینہ ہیں

ہیں وہ لاریب و شک، اِک پیکرِ حق و صداقت

 

زمانے نے وفاؤں کے قرینے ان سے سیکھے

انہیں پر ختم ہے فکر و عمل کی استقامت

 

مقاصد کی بلندی ان کا نصب العین ٹھہری

انہیں کی ذات سے پائی مقاصد نے شرافت

 

اب ان کے نام سے ہوتی ہے اس دل کو تسلی

اب ان کے ذکر سے پاتا ہے میرا دل حرارت

 

الٰہی! اب ہمیں سچائیوں کا عشق دے دے!

عطا کر دے حسین ابنِ علیؓ کی ہم کو جرأت

 

دیا شبیرؓ نے حسنِ عمل کا جو نمونہ

وہی کردار مل جائے ہمیں ویسی ہی سیرت

 

ہم اُس کردار سے ایوانِ سیرت جگمگائیں

زمانے بھر کو ہم وہ استقامت پھر دکھائیں

یہ نگارش اپنے دوست احباب سے شریک کیجیے
لُطفِ سُخن کچھ اس سے زیادہ