اردوئے معلیٰ

Search

حق کے پروانو! کرو روضۂ اطہر کا طواف

سب کی قسمت میں کہاں شہر منور کا طواف

 

تجھ کو آنکھوں میں سمو لوں ترا دامن چوموں

اے صبا! تونے کیا ہے درِ سرور کا طواف

 

اِس تمنا پہ مجھے دار بھی زنداں بھی قبول

کاش حاصل ہو مجھے کوئے پیمبر کا طواف

 

خوش نصیبی ہے کہ ہوں میں شہ بطحا کا غلام

دوستو ! آؤ کرو میرے مقدر کا طواف

 

میں یہ سمجھوں مری تقدیر کا سورج چمکا

ہو میسر جو مجھے کوئے پیمبر کا طواف

 

آ گیا ہاتھ مرے کوچۂ طیبہ کا غبار

جنتیں آئیں کریں اب مرے پیکر کا طواف

 

نعت محبوب خدا میں ہے یہ سر گرم سفر

آئیں الفاظ کریں خامۂ سرورؔ کا طواف

یہ نگارش اپنے دوست احباب سے شریک کیجیے
لُطفِ سُخن کچھ اس سے زیادہ