لکھوں جو نعتِ پیمبر ﷺ تو کس طرح لکھوں

لکھوں جو نعتِ پیمبر ﷺ تو کس طرح لکھوں

لیا ہے نام جو ان ﷺ کا لرز گیا ہے وجود

کہاں میں اپنے گناہوں کا بوجھ اٹھائے ہوئے

کہاں وہ نورِ مجسم، وہ حامد و محمود ﷺ

یہ نگارش اپنے دوست احباب سے شریک کیجیے
Share on facebook
Share on twitter
Share on whatsapp
Share on telegram
Share on email
لُطفِ سُخن کچھ اس سے زیادہ

اردوئے معلیٰ

پر

خوش آمدید!

گوشے

متعلقہ اشاعتیں

بخشش تھی سو رحمت کے خزینے سے مِلی ھے
پَل میں ورائے عرش گئے اور آگئے
درِ سرکارؐ کیا عظمت نشاں ہے
وہ صداقت وہ دیانت آپؐ کی
خداوندا مرا دِل شاد رکھنا
نگاہِ لطف آقاؐ غم زدہ رنجور ہوں میں
مرے دل میں مری سرکارؐ کی بس یاد بستی ہے
نہیں اُنؐ سا کوئی کون و مکاں میں
’’اے رضاؔ ہر کام کا اک وقت ہے‘‘
’’ملکِ سُخن کی شاہی تم کو رضاؔ مُسلّم‘‘