حُسن لاجواب آپ کا

حُسن لاجواب آپ کا

جسم ہے گُلاب آپ کا

 

مَہ جبیں ہیں آپ یا نبی

رُخ ہے آفتاب آپ کا

 

رونقِ جہانِ ہَست و بُود

رَشکِ کُل شباب آپ کا

 

راحتِ جہاں بھی، جان بھی

تذکرہ جناب آپ کا

 

رحمتہ اللعالمین بھی

خوب ہے خطاب آپ کا

 

مِل رہا ہے جو، جسے، جہاں

پاک ہے نصاب آپ کا

 

دَردِ لادَوا ہو یا مَرَض

شافی ہے لُعاب آپ کا

 

ہے رضاؔ پہ سایہء کرم

فیض بے حساب آپ کا

یہ نگارش اپنے دوست احباب سے شریک کیجیے
Share on facebook
Share on twitter
Share on whatsapp
Share on telegram
Share on email
لُطفِ سُخن کچھ اس سے زیادہ

اردوئے معلیٰ

پر

خوش آمدید!

گوشے

متعلقہ اشاعتیں

مشکلوں میں پکارا کرم ہی کرم
فاصلوں کو تکلف ہے ہم سے اگر ، ہم بھی بے بس نہیں ، بے سہارا نہیں
تمہیؐ سرور تمہیؐ ہو برگزیدہ یارسول اللہؐ
اگر میں عہد رسالت ماب میں ہوتا
جان ہیں آپؐ جانِ جہاں آپؐ ہیں
ہر موج ہوا زلف پریشانِ محمدؐ
رشکِ ایجاب تبھی حرفِ دعا ہوتا ہے
قصہء شقِّ قمر یاد آیا​
ہم گداؤں بے نواؤں کا سہارا آپ ہیں
گھڑی مڑی جی بھر آوندا اے ۔ پنجابی نعت