حیرت

اُس کو دیکھ کے میری آنکھیں ایسی تھیں

جیسے صحراؤں کے پالے بچے نے

پہلی پہلی بار سمندر دیکھا ہو

 

یہ نگارش اپنے دوست احباب سے شریک کیجیے
Share on facebook
Share on twitter
Share on whatsapp
Share on telegram
Share on email
لُطفِ سُخن کچھ اس سے زیادہ

اردوئے معلیٰ

پر

خوش آمدید!

گوشے

متعلقہ اشاعتیں

اُن کے دل میں قُل ھُوَ اللہُُ اَحَد ھے مَوجزن
جھجھکتے رھنا نہیں ھے ادا محبت کی
معلوم ہے جناب کا مطلب کچھ اور ہے
جس شہر میں سحر ہو وہاں شب بسر نہ ہو
گر چاہتے ہو حسرتِ ناکام دیکھنا
یاد
ہمارا کارِ سخن کتنے کام کا نکلا
ذرا سا بچ کے چلو کاٹتا ہے، کُتّا ہے
عرضی
مکالمہ مابین مسلمان اور سوشلسٹ