حیف اتنا تو دمِ رخصت کیا ہوتا خیال

حیف اتنا تو دمِ رخصت کیا ہوتا خیال

کون اس صحرا میں اس بیکس کا ہو گا غمگسار

یہ نگارش اپنے دوست احباب سے شریک کیجیے

اشتہارات

لُطفِ سُخن کچھ اس سے زیادہ