اردوئے معلیٰ

خدا نے خود لکھی قرآن میں مدحت محمد کی

خدا نے خود لکھی قرآن میں مدحت محمد کی

فلاحِ دین و دنیا ہے پڑھو سیرت محمد کی

 

ملے گا حشر کی گر می میں اُس کو سایہء رحمت

لئے پھرتا ہے اپنے ساتھ جو الفت محمد کی

 

جہاں تک آپ پہنچے ہیں ملائک بھی نہیں پہنچے

تعین کی حدوں سے دور ہے عظمت محمد کی

 

الہٰی مجھ کو دکھلا دے بہار گلشن طیبہ

جہاں پھیلی ہوئی ہے ہر طرف رنگت محمد کی

 

یہ حسرت ہے کہ میں بھی دیکھ آﺅں گنبد خضریٰ

مجھے بھی ہو میسر اے خدا قربت محمد کی

 

ترے اعمال ہی کام آئیں گے رحمن محشر میں

یقیناً خلد میں لے جائے گی نسبت محمد کی​

 

یہ نگارش اپنے دوست احباب سے شریک کیجیے

اشتہارات

لُطفِ سُخن کچھ اس سے زیادہ