اردوئے معلیٰ

خوشبوؤں سے مہکنے لگی ہے فضا، لے کے اسلام خیرالوریٰ آ گئے

بتکدے ہل گئے آ گیا زلزلہ ، رحمت عالمیں مصطفی آ گئے

 

دے رہے ہیں شجر اور حجر یہ صدا، لے کے سرکار دینِ ہدیٰ آ گئے

رب نے مقبول کر لی خلیلی دعا رحمت عالمیں مصطفی آ گئے

 

بیکسوں، بے سہاروں کو حامی ملا اور یتیموں غریبوں کو والی ملا

اے مریضو! تمہیں چارہ گر مل گیا رحمت عالمیں مصطفی آ گئے

 

ذرّے ذرّے میں تابندگی آ گئی آفتاب و قمر جگمگانے لگے

کہہ رہے ہیں ستارے بھی صلِّ علیٰ رحمت عالمیں مصطفی آ گئے

 

اونٹنی جو تھی بیمار اچھی ہوئی دودھ اب وہ زیادہ جو دینے لگی

یہ حلیمہ نے خوش ہو کے سب سے کہا رحمت عالمیں مصطفی آ گئے

 

جس نے دیکھا انہیں دیکھتا رہ گیا پڑھ کے صلِّ علیٰ یہ ہی کہتا رہا

کیوں نہ ہو نام پر ان کے شیدا فداؔ رحمت عالمیں مصطفی آ گئے

یہ نگارش اپنے دوست احباب سے شریک کیجیے

اشتہارات

لُطفِ سُخن کچھ اس سے زیادہ

اردوئے معلیٰ

پر

خوش آمدید!

گوشے۔۔۔

حالیہ اشاعتیں

اشتہارات

اشتہارات