خُدا کی یاد سے معمُور دل ہے

خُدا کی یاد سے معمُور دل ہے

سرُور و کیف سے مسرُور دل ہے

خدا نے کی عطا اپنی محبت

بہت ممنون ہے مشکور دل ہے

 

یہ نگارش اپنے دوست احباب سے شریک کیجیے
Share on facebook
Share on twitter
Share on whatsapp
Share on telegram
Share on email

اشتہارات

لُطفِ سُخن کچھ اس سے زیادہ

اردوئے معلیٰ

پر

خوش آمدید!

گوشے

متعلقہ اشاعتیں

جمالِ مصطفیؐ پیشِ نظر ہے
مرے آقاؐ تشریف لائیں گے اِک دِن
مانگنا اُنؐ سے شمس و قمر مانگنا
کرم کی اک نظر آقاؐ، جدائی مار ڈالے گی
اُنؐ کی را ہوں میں کہکشاں دیکھوں
درِ سرکارؐ تک رسائی ہو
اِک زمانہ فراق میں گزرا
فرازِ طُور سے غارِ حرا تک
خدا تک رہنما میرے محمدؐ
کوئی تو ہے جو نظامِ ہستی چلا رہا ہے ، وہی خدا ہے

اشتہارات