خُدا ہی خالقِ کون و مکاں ہے

خُدا ہی خالقِ کون و مکاں ہے

خدا تخلیق کارِ ہر زماں ہے

وہ مسجُودِ ملائک، اِنس و جاں ہے

ظفرؔ وہ قبلہ گاہِ عاشقاں ہے

 

یہ نگارش اپنے دوست احباب سے شریک کیجیے
Share on facebook
Share on twitter
Share on whatsapp
Share on telegram
Share on email
لُطفِ سُخن کچھ اس سے زیادہ

اردوئے معلیٰ

پر

خوش آمدید!

گوشے

متعلقہ اشاعتیں

نام بھی تیرا عقیدت سے لیے جاتا ہوں
جس دل میں نور عشق ہے ذات الہ کا
تجھی سے التجا ہے میرے اللہ
ہوتا ہے ترے نام سے آغاز مرا دن​
خدا کا خوف جس دل میں سمائے
خُدا کی یاد سے معمُور دل ہے
سمندر، کوہ و بن، ارض و سما ہیں
کہوں حمدِ خدا میں کس زباں سے
ترے انوار دیکھوں یا خُدا مجھ کو نظر دے
خدا قائم ہے دائم جاوداں ہے