اردوئے معلیٰ

دردِ تو بُود راحتِ جانِ منِ حزیں

روزے کہ در زمانہ طبیب و دوا نبود

 

تیرا درد ہی مجھ حزیں کی جان کے لیے

راحت تھا، اُن دنوں بھی کہ جب دنیا میں

نہ کوئی طبیب تھا اور نہ کوئی دوا تھی

یہ نگارش اپنے دوست احباب سے شریک کیجیے

اشتہارات

لُطفِ سُخن کچھ اس سے زیادہ

اردوئے معلیٰ

پر

خوش آمدید!

گوشے۔۔۔

حالیہ اشاعتیں

اشتہارات

اشتہارات