درِسرکارؐ پر ہر دم گھٹا رحمت کی چھائی ہے

درِسرکارؐ پر ہر دم گھٹا رحمت کی چھائی ہے

یہاں عشاق نے ہر دم جبیں اپنی جھکائی ہے

یہاں عشقِ حبیب کِبریا تقسیم ہوتا ہے

ظفرؔ اُمڈی چلی آتی یہاں ساری خدائی ہے

 

یہ نگارش اپنے دوست احباب سے شریک کیجیے
Share on facebook
Share on twitter
Share on whatsapp
Share on telegram
Share on email
لُطفِ سُخن کچھ اس سے زیادہ

اردوئے معلیٰ

پر

خوش آمدید!

گوشے

متعلقہ اشاعتیں

’’رہے گا یوں ہی اُن کا چرچا رہے گا‘‘
’’میں تری رحمت کے قرباں اے مرے امن و اماں ‘‘
’’ڈوبے رہتے ہیں تری یاد میں جو شام و سحر‘‘
’’گوش بر آواز ہوں قدسی بھی اُس کے گیٖت پر‘‘
ہر دور میں مخالفتیں اُن کی بڑھ گئیں
خدا میرا شفیق و مہرباں ہے
درِ خیر الوریٰ، ؐ خیر البشرؐ ہے
آپؐ کی یاد دِل میں بستی ہے
فلک پر ربِّ کعبہ، شافعِ محشرؐ سے ملتا ہے
خدا بھی آپؐ سے الفت، محبت ہم بھی کرتے ہیں