اردوئے معلیٰ

درِ خیرالورا ہے اور میں ہوں

میرے غم کی دوا ہے اور میں ہوں

 

مُرادوں کو ملی ہے منزلِ شوق

دُعاؤں کا صلہ ہے اور میں ہوں

 

خوشا قسمت کہ محرابُ النّبی میں

کسی کا نقشِ پا ہے اور میں ہوں

 

درِ اقدس کے آگے دل ہے لرزاں

کہ اُن کا سامنا ہے اور میں ہوں

 

ہوا ہوں بابِ رحمت سے جو داخل

عطاؤں پہ عطا ہے اور میں ہوں

 

دکھا بہزادؔ کو ہر سال بطحا

یہی پیہم دُعا ہے اور میں ہوں

یہ نگارش اپنے دوست احباب سے شریک کیجیے

اشتہارات

لُطفِ سُخن کچھ اس سے زیادہ

اردوئے معلیٰ

پر

خوش آمدید!

گوشے۔۔۔

حالیہ اشاعتیں

اشتہارات

اشتہارات