اردوئے معلیٰ

Search

دعا کو بھیک مل جائے اثر کی

ملے توفیق طیبہ کے سفر کی

 

شعور پیرویٔ مصطفی دے!

مرے اللہ ! سن لے چشمِ تر کی!

 

وہی اُسوہ رہے پیہم نظر میں

کہ جس پر ہے بِنا اُجلی سحر کی!

 

ضرورت ہے مری تاریکیوں کو

ابو القاسم کی سیرت کے قمر کی!

 

گزرنا ہے جہانِ آب و گِل سے

الٰہی خیر ہو میرے سفر کی!

 

رسولِ ہاشمی کا کوئی پیرو

کبھی صورت نہیں دیکھے سقر کی!

 

دعائیں مانگ لی ہیں میں نے ساری

الٰہی اب ضرورت ہے اثر کی!

 

عزیزؔ احسن کرم کا ملتجی ہے

عطا کر حاضری پھر اپنے گھر کی!

یہ نگارش اپنے دوست احباب سے شریک کیجیے
لُطفِ سُخن کچھ اس سے زیادہ