اردوئے معلیٰ

دل سے نکل کے ہر صدا کیوں نہ دلوں میں ڈوب جائے

دل سے نکل کے ہر صدا کیوں نہ دلوں میں ڈوب جائے

ساز مرا لطیف ہے ، نغمہ ترا لطیف تر

یہ نگارش اپنے دوست احباب سے شریک کیجیے

اشتہارات

لُطفِ سُخن کچھ اس سے زیادہ