دل میں بس دو مکین رہ پائے

دل میں بس دو مکین رہ پائے

پہلے الفت تھی، اب اُداسی ہے

 

یہ نگارش اپنے دوست احباب سے شریک کیجیے

اشتہارات

لُطفِ سُخن کچھ اس سے زیادہ