دوسری ملاقات

آج سترہ(۱۷) دِنوں بعد
میں نے اُسے دیکھا تھا
وہ کسی زرد سوکھی ہوئی پتّیوں کی طرح
کرب چہرے پہ اوڑھے ہوئے
جب مرے پاس سے گذری وہ
اُس سے ملنے کی جتنی خوشی تھی مجھے
اُس کے چہرے کی پژمردگی دیکھ کر
سب اکارت گئی۔
یہ نگارش اپنے دوست احباب سے شریک کیجیے
Share on facebook
Share on twitter
Share on whatsapp
Share on telegram
Share on email

اشتہارات

لُطفِ سُخن کچھ اس سے زیادہ

اردوئے معلیٰ

پر

خوش آمدید!

گوشے

متعلقہ اشاعتیں

طلسم خانۂ امریکہ
المیہ
رخصتی
رہائش
صاحبِ اختیار خالق ہے
سیرتِ پاک پر بات کا سلسلہ
جو عبث ہم پہ رہا شک اُس کا
کمٹّڈ سیپریشن کے بعد
سبھی سرگوشیاں جب ھار کے دم توڑ دیتی ھیں
تم کیا جانو!

اشتہارات