اردوئے معلیٰ

Search

دِل نشیں کانوں میں ہے رس گھولتی آوازِ نعت

قلبِ مُردہ کے لئے ہے زندگی آوازِ نعت

 

دل دھڑکتا ہے عجب سی کیفیت چھانے لگی

عِشق میں جب ڈوب کر میں نے سُنی آوازِ نعت

 

ہے یہ راہِ عشق میں میری ترقی کا سبب

کررہی ہے راہ اِک روشن نئی آوازِ نعت

 

جو کہ طیبہ میں سُنائی حضرتِ حسّان نے

خوب وہ اشعار ہیں اور بس وہی آوازِ نعت

 

مُنکروں کے قلب پر آرے چلانے کا سبب

عاشقوں کو خوب دیتی ہے خوشی آوازِ نعت

 

دُور کر دیتی ہے دم میں بِالیقیں غم کی خِزاں

آزمُودہ ہے نہایت واقعی آوازِ نعت

 

چہرۂ غمگین مِثلِ گُل کِھلے دل شاد ہو

نخلِ ایماں کو ہے دیتی تازگی آوازِ نعت

 

آنکھ پرنم ، سر جُھکا ہو اور ہو پاسِ ادب

قلبِ عاشق کو رُلائے گی جبھی آوازِ نعت

 

ایک مِصرع بھی اگر جو مصطفیٰ کو بھا گیا

بخش دیگی یُوں نجاتِ دائمی آوازِ نعت

 

اِلتِجاء ہے قلبِ مرزا کی شہِ کون و مکاں

یہ گدا ہو اور طیبہ کی گلی آوازِ نعت

یہ نگارش اپنے دوست احباب سے شریک کیجیے
لُطفِ سُخن کچھ اس سے زیادہ