اردوئے معلیٰ

دِوانو! جشن مناؤ نبی کی آمد ہے

جہاں میں دھوم مچاؤ نبی کی آمد ہے

 

غمِ حیات کو تسکینِ دائمی حاصل

خوشی کے دیپ جلاؤ نبی کی آمد ہے

 

خدا کی نعمتیں بھی بٹ رہی ہیں دنیا میں

سبھی کو مکے بلاؤ نبی کی آمد ہے

 

جلوسِ جشنِ ولادت میں ہیں ملائک بھی

غلامو! جھومتے جاؤ نبی کی آمد ہے

 

چمن ، چمن میں بہاریں نئی ، نئی رونق

نگر ، نگر کو سجاؤ نبی کی آمد ہے

 

جگہ ، جگہ پہ درود و سلام کے نغمے

نبی کے نعرے لگاؤ نبی کی آمد ہے

 

سجی ہے محفلِ جشنِ نبی رضاؔ آؤ

نبی کی نعت سناؤ نبی کی آمد ہے

یہ نگارش اپنے دوست احباب سے شریک کیجیے

اشتہارات

لُطفِ سُخن کچھ اس سے زیادہ

اردوئے معلیٰ

پر

خوش آمدید!

گوشے۔۔۔

حالیہ اشاعتیں

اشتہارات

اشتہارات