اردوئے معلیٰ

دکھ درد کا ہوتا ہے درمان مدینے میں

سب مشکلیں ہوتی ہیں آسان مدینے میں

 

دل اس کا مدینے سے پھر لَوٹ نہیں پاتا

اک بار جو ہو جائے مہمان مدینے میں

 

اب پیشِ نظر میرے بس طیبہ کا جلوہ ہے

رہتا ہوں تصور میں ہر آن مدینے میں

 

ساتھ اپنے درودوں کے نذرانے لیے جاؤ

کام آتا ہے بس اتنا سامان مدینے میں

 

سرکار سے دیباچہ خواہش ہے کہ لکھواؤں

اس واسطے لایا ہوں دیوان مدینے میں

 

اُس شہر میں جانے کا یہ ایک قرینہ ہے

پڑھتا ہوا جاتا ہوں قرآن مدینے میں

 

ہر لمحہ مرے دل کو حسرت یہ ستاتی ہے

رحمت کی فدا دیکھوں باران مدینے میں

یہ نگارش اپنے دوست احباب سے شریک کیجیے

اشتہارات

لُطفِ سُخن کچھ اس سے زیادہ

اردوئے معلیٰ

پر

خوش آمدید!

گوشے۔۔۔

حالیہ اشاعتیں

اشتہارات

اشتہارات