اردوئے معلیٰ

Search

 

دیارِ طیبہ میں دائم جو قربتیں ملتیں

بیان کر نہیں سکتا وہ لذتیں ملتیں

 

مرا وقار تو آقا کی نعت گوئی ہے

جو نعت لکھتا نہیں تو، یہ رفعتیں ملتیں؟

 

انھوں نے رتبہ بڑھایا بہت غلاموں کا

نبی نہ آتے تو انساں کو عظمتیں ملتیں؟

 

انھوں نے دخترِ حوّا کو مرتبہ بخشا

نبی نہ آتے تو نسواں کو عصمتیں ملتیں؟

 

نبی نے ہم کو دیا ہے خدا نے جو بخشا

اگر حضور نہ آتے تو نعمتیں ملتیں؟

 

نبی کی سیرتِ اطہر پہ ہم اگر چلتے

ہمیں دوبارہ وہ ماضی کی عزتیں ملتیں

 

جو دل سے اُن کے فرامین پر عمل کرتے

تو علم و فضل کی ہم کو بھی وسعتیں ملتیں

 

جو پڑھتے رہتے دُرود ان پہ صدق دل سے ہم

ہمارے رزق میں لاریب برکتیں ملتیں

 

وسیلہ آپ کا جو مشکلات میں دیتے

قسم خدا کی ہمیں رب کی نصرتیں ملتیں

 

بقیعِ پاک میں مدفن ہمارا بن جاتا

عطاے رب سے ہمیں بھی تو جنتیں ملتیں

 

پڑا ہی رہتا مُشاہد نبی کے قدموں میں

"کنارِ خاکِ مدینہ میں راحتیں ملتیں”

 

یہ نگارش اپنے دوست احباب سے شریک کیجیے
لُطفِ سُخن کچھ اس سے زیادہ