اردوئے معلیٰ

Search

ذکرِ حبیبِ پاک دِلوں کا سرور ہے

میری نظر میں آپ کے جلووں کا نور ہے

 

سرکار کی ثنا میں جو کٹتے ہیں رات دن

یہ مجھ پہ سب عنایتِ ربِ غفور ہے

 

یادوں کے دیپ جل اٹھے دل کے دیار میں

مہکی فضا حرا کی سماں کوہِ طور ہے

 

طیبہ نگر میں ہر گھڑی بٹتی ہیں نعمتیں

جس سمت دیکھتے ہیں کرم کا ظہور ہے

 

آئی ہے جس طرف گل و گلزار کر گئی

ایسی ہی با کمال نگاہِ حضور ہے

 

شہرِ نبی کی شان کی توصیف کیا کریں

ہر گوشہ ہے مہکتا فضا نُور نُور ہے

 

تو ناز خوش نصیب ہے جب چاہے مانگ لے

صدقہ نبی کی آل کا ملتا ضرور ہے

یہ نگارش اپنے دوست احباب سے شریک کیجیے
لُطفِ سُخن کچھ اس سے زیادہ