اردوئے معلیٰ

رب نے جس کو دی جہاں کی نگہبانی وہ رسول

صدقہ جس کا خلقِ ارضی ، آسمانی وہ رسول

 

جس کی آمد سے کتب منسوخ پچھلی ہو گئیں

لے کے آیا جو شریعت جاودانی وہ رسول

 

غیب کی خبریں ہمیں جس نے بتائیں وہ نبی

جنت و دوزخ کی جس نے دی نشانی وہ رسول

 

دوڑ کرآئیں شجر ، کلمہ پڑھیں جس کا حجر

انگلیوں سے جس کی جاری میٹھا پانی وہ رسول

 

سورج اُلٹے پاؤں پلٹا ، چاند کے ٹکڑے ہوئے

ذرے ذرے پر ہے جس کی حکمرانی وہ رسول

 

دو جہاں سے ہو گئیں کافور ساری ظلمتیں

نور ایسا لے کے آیا ضوفشانی وہ رسول

 

بے عدد بخشی ہیں ہم کو رب نے اپنی نعمتیں

بھیج کر جس کو جتائی مہربانی وہ رسول

 

پیدا ہوتے ہی گئے سجدے میں اُمت کے لیے

وقف ملت جس نے کی ہے زندگانی وہ رسول

 

حق ادا ہوگا نہ آسیؔ اس نبی کی شان کا

آگیا عالم ہے جس کی راجدھانی وہ رسول

یہ نگارش اپنے دوست احباب سے شریک کیجیے

اشتہارات

لُطفِ سُخن کچھ اس سے زیادہ

اردوئے معلیٰ

پر

خوش آمدید!

گوشے۔۔۔

حالیہ اشاعتیں

اشتہارات

اشتہارات