اردوئے معلیٰ

Search

رب نے جس کی مانی ہے تم اس نبی کو مان لو

وہ ہیں محبوبِ خدا اِس برتری کو مان لو

 

تا ابد ختمِ نبوت کا ہے سہرا اُن کے سر

دنیا والو اس نبیِ آخری کو مان لو

 

ان کا ہے اسمِ مبارک ہر اندھیرے میں ضیا

تم بھی اس رعنائی کو اس روشنی کو مان لو

 

ایک پہلو سیرتِ سرکار کا یہ بھی تو ہے

عظمتیں مطلوب ہیں تو سادگی کو مان لو

 

اُس کو رہبر مان جو سب کچھ کرے اُن پر فدا

یہ بھلا کس نے کہا ہے ہر کسی کو مان لو

 

خود فریبی میں نہ رہنا یہ عذابِ جان ہے

دین سے کرلو وفا یا بے حسی کو مان لو

 

کہہ رہی ہے روحِ انساں اتنی بے چینی کے ساتھ

سرورِ کون و مکاں کی پیروی کو مان لو

 

لکھ دیا ہے یہ خلاصہ عقلِ انساں نے شکیلؔ

مدحتِ آقا کے آگے بے بسی کو مان لو

یہ نگارش اپنے دوست احباب سے شریک کیجیے
لُطفِ سُخن کچھ اس سے زیادہ