اردوئے معلیٰ

رحمتِ عالم ، نورِ مجسم ، صلّ اللہ علیہ وسلّم

حرمتِ انساں ، نازشِ آدم ، صلّ اللہ علیہ وسلّم

 

کامل و اکمل ، حاضر و ناظر ، مشفق و یاور ، حامی و ناصر

وجہِ وجودِ ابنائے آدم ، صلّ اللہ علیہ وسلّم

 

آقا ! آپ ہی محبوبِ رب ہیں ، آپ ہی مالکِ شرق و غرب ہیں

آپ مقدس ، آپ مکّرم ، صلّ اللہ علیہ وسلّم

 

جو بھی آپ کے در کا ہوا ہے ، وہ سمجھو اس گھر کا ہوا ہے

حشر میں بھی وہ ہوگا معظم ، صلّ اللہ علیہ وسلّم

 

جس نے بھی ہے ان کو پکارا ، بن گئے وہ ہر اک کا سہارا

دُور رہیں اس سے سب غم ، صلّ اللہ علیہ وسلّم

 

میرے ملجا ، میرے ماویٰ ، میرے رنج و الم کا مداوا

میرے وردِ زباں ہے ہر دم ، صلّ اللہ علیہ وسلّم

 

یوسفؔ بحرِ غم میں گھرا ہے ، چشمِ کرم کی استدعا ہے

سنورے زلفِ حیات ہے برہم ، صلّ اللہ علیہ وسلّم

یہ نگارش اپنے دوست احباب سے شریک کیجیے

اشتہارات

لُطفِ سُخن کچھ اس سے زیادہ

اردوئے معلیٰ

پر

خوش آمدید!

گوشے۔۔۔

حالیہ اشاعتیں

اشتہارات

اشتہارات