روشنی سے نکھر گئے اطراف

روشنی سے نکھر گئے اطراف

میں نے اِک نام لکھا کاغذ پر

یہ نگارش اپنے دوست احباب سے شریک کیجیے
Share on facebook
Share on twitter
Share on whatsapp
Share on telegram
Share on email
لُطفِ سُخن کچھ اس سے زیادہ

اردوئے معلیٰ

پر

خوش آمدید!

گوشے

متعلقہ اشاعتیں

’’حاسدانِ شاہِ دیں کو دیجیے اخترؔ جواب‘‘
صد رشکِ کائنات محمد ﷺ کی ذات ہے
صبا مکہ میں ہدیہ اس کا جا کر پیش کردینا
کلفتِ جاں میں ترے در کی طرف دیکھتا ہوں
چلو شاید کہ منزل کا نشاں ہے
یوں تو صبح بھی سُندر ہے پیاری ہے
دل سے تم عزت محمد ﷺ کی کرو
حضور آپ کا گھر حاصل زمان ومکاں
کب تک یہ مصیبتیں اُٹھائے اسلام
دل میں سرکارؐ کی محبت ہے